Hyderpora Encounter: حیدرپورہ تصادم کی ایس آئی ٹی رپورٹ پر اٹھے سوال، ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا- ہمیں دکھ ہوتا ہے

جموں و کشمیر کے ڈی جی پی دلباغ سنگھ کا کہنا ہے کہ پولیس اور دیگر حفاظتی عملے کو سال دو ہزار اکیس میں ملٹینسی کے خلاف کاروائیوں میں بڑی کامیابی ملی۔ جموں میں سالانہ میڈیا بریفنگ کے دوران ڈی جی پی نے کہا کہ سال دہ ہزار اکیس کے دوران دہشت گردوں کے خلاف سو آپریشن کئے گئے جس دوران ایک سو 82 دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا۔
جموں و کشمیر: جموں و کشمیر کے ڈی جی پی دلباغ سنگھ کا کہنا ہے کہ پولیس اور دیگر حفاظتی عملے کو سال دو ہزار اکیس میں ملٹینسی کے خلاف کاروائیوں میں بڑی کامیابی ملی۔ جموں میں سالانہ میڈیا بریفنگ کے دوران ڈی جی پی نے کہا کہ سال دہ ہزار اکیس کے دوران دہشت گردوں کے خلاف سو آپریشن کئے گئے جس دوران ایک سو 82 دہشت گردوں کو ہلاک کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کے خلاف آپریشنز کے دوران حفاظتی عملے کے 43 جوان شہید ہوگئے، جن میں سے بیس کا تعلق جموں و کشمیر پولیس سے جبکہ دیگر 23 کا تعلق مختلف سکیورٹی ایجنسیوں کے ساتھ تھا۔ سال دو ہزار اکیس کے دوران چوالیس بڑے دہشت گرد کمانڈروں کو ہلاک کیا گیا، جن میں سے ستایس کا تعلق لشکر طعیبہ، دس کا تعلق جیش محمد اور دیگر سات کا تعلق حزب المجاہدین سے تھا۔
ڈی جی پی دلباغ سنگھ نے کہا کہ سال دو ہزار اکیس میں 80 دہشت گردوں کو گرفتار کرلیا گیا۔ ڈائیریکٹر جنرل پولیس نے کہا کہ فی الوقت جموں و کشمیر میں سرگرم ملی ٹنٹوں کی تعداد ماضی کے مقابلے میں سب سے کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی جانب سے دہشت گردوں کو جموں وکشمیر میں داخل کرنے کی بارہا کوششیں کی گئیں۔ تاہم فوج اور دیگر حفاظتی عملے کی چوکسی کی وجہ سے زیادہ تر کوششوں کو ناکام بنا دیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں